میرے مالک پاکستان کو درندوں کی بستی بننے سے بچا لے –

کشمور (مانیٹرنگ ڈیسک ) کشمور میں بے دردی سے زکا نشانہ بننے والی 4 سالہ بچی کا کامیاب آپریشن کر لیا گیا۔تفصیلات کے مطابق گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کشمور میں اجتماعی ز واقعے کا نوٹس لے لیا ہے۔دو روز قبل کشمور میں ایک ایسا واقعہ پیش آیا تھا جس نے ہر شہری کو لرزا کر رکھ دیا تھا۔کراچی کی رہائشی تبسم بی بی کو نوکری کا جھانسہ دے کر کشمور لے جایا گیا تھا جہاں پہلے اس کے ساتھ اور پھراس کی چار سالہ بیٹی کے ساتھ اجتماعی ز کی گئی۔ معصوم بچی

کے ساتھ وحشیانہ تشدد بھی کیا گیا ، بچی کے پیٹ کی آنت بھی نکل آئی ، اس کے دانت توڑے گئے جب کہ سر کے بال بھی کاٹ دئیے ، بچی کا گلا بھی دبایا گیا تھا۔پولیس نے واقعے میں ملوث ایک ملزم کو گرفتار کر لیا ہے جس نے اعتراف جرم بھی کر لیا ہے۔ رفیق ملک کے علاوہ ملزم خیر االلہ سمیت دیگر کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ترجمان گورنر سندھ کا کہنا ہے کہ گورنر سندھ نے واقعے کی فوری رپورٹ طلب کرتے ہوئے آئی جی پولیس اور چیف سیکرٹری سندھ سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کشمور واقعہ بہت تکلیف دہ ہے۔واقعے میں ملوث ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے۔دوسری جانب اسپتال میں داخل ز کا شکار بچی کا کامیاب آپریشن بھی کر لیا گیا ہے۔ڈاکٹر کا کہنا ہے جب بچی کو اسپتال لایا گیا تھا تو اس کی حالت بہت خراب تھی تاہم اب پہلے سے بہتر ہے۔قبل ازیں سندھ کے شہر کشمور میں ماں اور بچی کو ز کا نشانہ بنائے جانے کے دلخراش واقعے کی مزید اور دل دہلا دینے والی تفصیلات سامنے آئی تھیں۔پولیس کے مطابق ظالم جنسی درندوں نے 4 سالہ معصوم بچی کو بار بار ز کا نشانہ بنایا۔ بچی ہسپتال میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رپی ۔ بچی کی حالت بہت تشویش ناک بتائی گئی تھی ، ڈاکٹرز بچی کی جان بچانے کی کوششوں میں مصروف رہے ۔ واقعے کے حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون کو نوکری کا جھانسہ دے کر بلایا گیا اور پھر ماں اور 4 سالہ بچی کو اجتماعی ز کا نشانہ بنانے کے بعد فروخت کردیا گیا۔

یہاں کلک کر کے شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *