’’میں ساڑھے 6گھنٹے سے باہر بیٹھی ہوں، بلاول ہاؤس میں خواتین کو عزت نہیں دی جاتی۔‘‘ بلکہ وہاں کیا کام کیا جاتا ہے؟ میڈیا سیل کی خاتون رُکن نے پول کھول دیے

کراچی (ویب ڈیسک) بلاول ہاؤس میڈیا سیل کی رکن شازیہ کا بلاول ہاؤس میں داخلہ بند کردیا گیا۔ ڈسٹرکٹ گورنگی کی سیکٹریری اطلاعات شازیہ نے بلاول ہاؤس کے باہر احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ بلاول ہاؤس کے میڈیا سیل کے اجلاس میں بلایا گیا تھا، اجلاس میں شرکت کے لئے آئی


تو معلوم ہوا فہرست میں نو انٹری لکھا ہوا ہے، بلاول ہاؤس میڈیا سیل میں خواتین کو عزت نہیں دی جاتی۔ شازیہ کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری اس معاملے کا نوٹس لیں، میں ساڑھے 6 گھنٹے سے یہاں بیٹھی ہوئی ہوں، جب بلاول ہاؤس سے کوئی بات نہ کرے احتجاج بیٹھی رہوں گی۔ شازیہ نے بلاول ہاؤس کے باہر دھرنا دیتے ہوئے شدید احتجاج کیا اور کہا کہ بی بی شہید جو کہ خواتین کے حقوق کے لیے لڑتی رہی اور آمر کا ڈٹ کر مقابلہ کیا آج اسی کی ایک کارکن بلاول ہاؤس کے مافیہ کا سامنا ہے ، یہ جس کو چاہتے ہیں اندر کر دیتےہیں اور جسے چاہتے ہیں باہر کر دیتے ہیں ، میں‌اکیلی لڑکی مافیہ سے لڑ رہی ہوں۔ شازیہ کا کہنا تھا کہ جب تک مجھ سے پوچھا نہیں جاتا میں ادھر بیٹھی رہوں گی اور اپنا احتجاج جاری رکھوں گی۔ شازیہ کاکہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری کو نوٹس لینا چاہیے کہ مافیا کس طرح ہمارے جیسی کارکن اور زمہ دار لڑکیوں کو آگے نہیں‌آنے دیتا۔ اگرایک زمہ دار کا یہ حال ہے تو پھر عام کارکن کے ساتھ کیسا سلوک ہوگا۔ خواتین کے حقوق کی علمبردار پی پی پی اب کیوں ایک لڑکی کے حق کا خیال نہیں رکھ رہی۔

یہاں کلک کر کے شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *