ہماری زندگی میں سائنس کی اہمیت

ہماری زندگی میں سائنس کی اہمیت

ضیغم قدیر

سائنس کی اہمیت

سائنس

ہم سائنس کمیونیکیٹرز کا اتنی اتنی لمبی تحاریر مفت میں لکھنے کا صرف ایک ہی مقصد ہوتا ہے وہ یہ کہ ایک عام شخص کے نظریات کلئیر ہوں۔ہم ایک عام شخص کے نظریات اور سوچ کی اتنی فکر رکھتے ہیں کہ ہماری ہر ممکن کوشش ہوتی ہے کہ وہ اپنے آباؤاجداد کی طرح سوڈو سائنس پہ یقین کرکے بلیک میل نا ہو بلکہ حقائق جان کرجئیے۔وہ متھس سے ہٹ کر چھوٹی چھوٹی غلط انفارمیشن پر یقین کرکے خود کو ٹینشن میں ڈال کر نا جئیے بلکہ اپنے نظریات کلئیر کرکے جئے۔

سائنس کوئی خراب/متروک علم نہیں بلکہ یہ کائنات کا علم ہے خود کو جاننے کا علم ہے۔آپ ایٹمز کے ملاپ سے بنے ہیں لیکن وہی ایٹم جو آپکے جسم میں سوچنے والا ایک نیوران بناتے ہیں وہ آپکے دماغ سے باہر کوئی اور پروگرام کررہے ہوتے ہیں،اور مختلف جگہوں پہ کوئی اور کام کرتے ہیں، انکی خصوصیات کوئی اور ہوتی ہیں۔اور ان سب کو پڑھنے کا علم ہی سائنس ہے۔

آج انڈوپاکستان دنیا سے کافی پیچھے ہے اسکی وجہ یہی ہے کہ ہم مروجہ علوم سے دور ہیں۔ہمارے پاس ہنر ہے لیکن ہمارا طریقہ پرانا ہے۔ہمارے پاس دماغ ہیں لیکن وہ مختلف خرافات میں الجھے ہوۓ ہیں اور ہمارا مقصد انہی دماغوں کو علم و تحقیق کی راہوں پہ گامزن کرنا ہے۔تاکہ ہمارا مستقبل بہتر ہوسکے ہمارے بچوں کا مستقبل شاندار ہوسکے۔

بطور ایک سائنس کمیونیکیٹر میرا بھی یہی مقصد ہے کہ ہماری عوام گمراہی میں نا جئیے بلکہ علم و جستجو کی راہوں میں جئے۔ایک صحتمند زندگی گزارے۔اسکے نظریات کلئیر ہوں۔

ہم انسانوں کو باقی جانداروں سے جو چیز ممتاز کرتی ہے وہ ہماری تحقیق کی چاہ ہی ہے۔ہم وہ نہیں مانتے جو ہمیں درست لگتا ہے بلکہ ہم وہ مانتے ہیں جو درست ہوتا ہے۔ہم اپنے وجود پہ سوال اٹھانا جانتے ہیں ہم حقیقت پہ سوال اٹھانے کی طاقت رکھتے ہیں اور سوال اٹھانا ہر ایک کا حق ہے۔اگر ہم نے اپنے دیگر انسان بھائیوں کی مدد نہیں کرنی تو ہم میں اور دوسرے جانوروں میں کیا فرق رہ جاتا ہے؟

ہمیں علم پھیلانا ہے ہر ذی روح کو شعور کی راہوں پہ چلانا ہے۔ایک قتل و غارت اور جلاؤ گھیراو کرنے والے شدت پسند سے اسے ایک علم و تحقیق کی راہوں پہ چلنے والا انسان بنانا ہے یہی میرا عزم ہے اور ہر انسان کا بھی یہی عزم ہونا چاہیے۔آئیے نفرت کی بجاۓ پھول بانٹیں۔

دوستوں سے شیئر کریں

تبصرہ کریں