بلاگ یا ویب سائٹ کیسے بنائیں ؟ How to create a website in Urdu

ویب سائٹ بنانے کا طریقہ ۔ بلاگ یا ویب سائٹ کیسے بنائیں ؟

رحیم بلوچ

ویب سائٹ کیسے بنائیں

ویب سائٹ بنانے کا طریقہ

آج کل کاروبار کے لیے یا مشغلے کے طور پر ہر کوئی ویب سائٹ یا بلاگ بنانا چاہتا ہے۔ اس حوالے سے مجھے کافی دوست میسج کرتے ہیں۔ آج میں نے سوچا وہ تمام باتیں جو میں ان لوگوں کو بتاتا ہوں ایک آرٹیکل میں پیش کروں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ مستفید ہو سکیں۔

ویب سائٹ اور بلاگ میں فرق

ویب سائٹ عموما کمپنیوں ، سکولوں اور گورنمنٹ اداروں کے ہوتے ہیں جہاں ان کے بارے میں معلومات لکھی ہوتی ہے۔ وہاں کمنٹ کرنے کا آپشن یا معلومات لکھنے والے کا نام ظاہر نہیں ہوتا۔
بلاگ میں مختلف موضوعات یا کسی ایک موضوع پر آرٹیکلز ہوتی ہیں۔ اس میں مصنف کا نام اور یوزر کے لیے کمنٹ کا آپشن بھی ہوتا ہے۔ مختلف نیوز سائٹس بھی بلاگ کی شکل میں ہیں۔ بلاگ کسی کی ذاتی تحریروں یا مختلف موضوعات پر مفید معلومات پر بھی مشتمل ہوتی ہے۔

ویب سائٹ یا بلاگ کے لیے ضروری چیزیں

ویب سائٹ یا بلاگ کے لیے سب سے ضروری چیزیں ڈومین اور ہوسٹنگ ہیں۔ ڈومین سے مراد ویب سائٹ ایڈریس جیسے www.urduzameen.com اور ہوسٹنگ سے مراد کسی ویب سائٹ کا ڈیٹا محفوظ کرنے کی جگہ۔ مثال کے طور پر اس ویب سائٹ کی تمام تصاویر اور آرٹیکلز ہوسٹنگ سرورز پر محفوظ ہیں۔ جب آپ یہ سائٹ اوپن کرتے ہیں تو آپ ہوسٹنگ سرورز سے کنیکٹ ہوکر یہ آرٹیکل اور اس سائٹ پر موجود ڈیٹا دیکھ رہے ہوتے ہیں۔ اگر ہوسٹنگ سرور میں خرابی ہوجائے تو سائٹ اوپن نہیں ہوگی۔
ڈومین کی سالانہ فیس ہوتی ہے جبکہ ہوسٹنگ کی فیس ماہانہ کے حساب سے ہوتی ہے۔ ایک نارمل ڈومین کی سالانہ فیس پندرہ سو سے دوہزار تک ہے جبکہ ہوسٹنگ کی قیمت ماہانہ تین ڈالر سے سات ڈالر تک ہوتی ہے۔

کس ڈومین کا انتخاب کیا جائے ؟

ڈومین جیسے ڈاٹ کام ڈاٹ نیٹ ڈاٹ پی کے وغیرہ مختلف ڈومین کمپنیوں سے خریدے جا سکتے ہیں۔ کچھ پاکستانی کمپنیاں ہیں کچھ بین الاقوامی۔ عام طور پر سب سے معیاری اور مقبول ڈومین ڈاٹ کام ہے۔ اس کے علاوہ آپ اپنے ملک کے حساب سے ڈاٹ پی کے ڈاٹ یو کے وغیرہ جیسے ڈومینز بھی خرید سکتے ہیں۔ اگر آپ کسی آرگنائزیشن کے لیے سائٹ بنا رہے تو ڈاٹ او آر جی ڈومین خرید سکتے ہیں۔ ڈومین خریدنے کے لیے بین الاقوامی ویب سائٹ گوڈیڈی بہت مقبول ہے۔ گوڈیڈی سے پہلی دفعہ ڈومین آپ کو ننانوے روپے میں مل سکتی ہے اس کے بعد سالانہ فیس دوہزار روپے کے قریب ہوتی ہے۔

ہوسٹنگ کا انتخاب

ہوسٹنگ کی ماہانہ فیس ہوتی ہے اور ہر ہوسٹنگ کمپنی کی الگ فیس ہوتی ہے۔ اس وقت سب سے مقبول بلو ہوسٹ ہے جو آپ کو ڈومین بھی مفت دیتا ہے لیکن یہ عام آدمی کے لیے قدرے مہنگا ہے۔ اگر آپ بزنس سائٹ بنا رہے ہیں bluehost کا انتخاب کریں۔ اس کے علاوہ NameCheap سے ہوسٹنگ خرید سکتے ہیں جو کہ ساتھ میں مفت ڈومین بھی دیتے ہیں۔ ان دو کمپنیوں کے علاوہ کہیں سے بھی ہوسٹنگ خرید لیں مگر اس کمپنی کا ریویو ضرور پڑھیں کہ لوگوں کی کیا رائے ہے اس ہوسٹنگ کے بارے میں۔ اس کے علاوہ اس ہوسٹنگ سرورز کا اسپیڈ چیک کریں کیونکہ ویب سائٹ کی اسپیڈ ہوسٹنگ پر منحصر ہوتی ہے۔

کئی مفت ہوسٹنگ فراہم کرنے والی کمپنیاں بھی موجود ہیں لیکن ان کے سرورز اکثر ڈاؤن ہوتے ہیں۔ میں ایک ایسی کمپنی کی ہوسٹنگ استعمال کر رہا ہوں جو بالکل مفت ہے اور اس کے سرورز بھی کافی اچھے ہیں لیکن اس کمپنی سے مفت ہوسٹنگ کی اپروول ملنا آسان نہیں۔ اگر آپ مفت میں لائف ٹائم ہوسٹنگ یوز کرنا چاہتے ہیں تو اس لنک پر کلک کر کے مجھ سے رابطہ کر سکتے ہیں۔

ویب سائٹ کی تیاری

ویب سائٹ یا بلاگ کی سیٹنگ کے لیے آپ کو اپنی ہوسٹنگ کمپنی کے کنٹرول پینل میں لاگ ان ہو کر ویب سائٹ سیٹ اپ کرنا ہوگا۔ اس سیٹ اپ کے بہت سے طریقے ہیں۔ اب یہ آپ پر منحصر ہے کہ آپ کس نوعیت کی ویب سائٹ بنانا چاہ رہے ہیں۔ مثال کے طور پر اگر کسی بے ویب ڈیزائنگ اور پی ایچ پی سیکھی ہوئی ہے تو وہ اپنی پسند کا سائٹ بنا سکتا ہے اس میں جو چاہے فیچرز شامل کر سکتا ہے۔ فیس بک وغیرہ جیسے بڑے سائٹ پی ایچ پی سے بنے ہوئے ہیں۔ پی ایچ پی میں مختلف کوڈنگ اور سکرپٹس استعمال کیے جاتے ہیں۔

اگر آپ کو کوڈنگ وغیرہ کی سمجھ نہیں تو آپ اپنی ہوسٹنگ میں ورڈپریس انسٹال کر کے اپنا بلاگ بنا سکتے ہیں۔ بلاگنگ کے لیے ورڈپریس اس وقت سب سے مقبول اور آسان ہے اس میں کسی قسم کی کوڈنگ کی ضرورت نہیں پڑتی اس لیے ایک عام آدمی بھی ورڈپریس کے ذریعے اپنا بلاگ بنا کر استعمال کر سکتا ہے۔ ورڈپریس کے لیے ہزاروں تھیم اور پلگ موجود ہیں آپ کوئی بھی تھیم انسٹال کریں آپ کے سائٹ کا ڈیزائن تیار ہے۔ کوئی بھی فیچر ایڈ کرنا ہو اس فیچر کے لیے پلگ ان انسٹال کر کے وہ فیچر اپنی سائٹ پر بغیر کسی کوڈنگ اور محنت کے استعمال کر سکتے ہیں۔

ورڈپریس کے علاوہ جوملہ نامی ایک سافٹ ویئر سے بھی اسی طرح آسانی سے بلاگ بنائے جا سکتے ہیں مگر ورڈپریس اس قدر مقبول ہے کہ بڑی بڑی کمپنیاں اس کا استعمال کرتی ہیں۔
ورڈپریس انسٹال کرنے کے بعد اپنی ڈومین کے DNS سیٹنگ میں نام سرورز کو ہوسٹنگ کمپنی کے دیے گئے نام سرورز پر منتقل کریں۔ یوں کوئی بھی آپ کا ڈومین یعنی ویب سائٹ کا لنک کھولے گا وہ آپ کی ہوسٹنگ سرور سے کنیکٹ ہوگا۔ اور آپ کی سائٹ پر موجود مواد دیکھ پائے گا۔

اس آرٹیکل کا بقیہ حصہ بہت جلد شایع کیا جائے گا۔

دوستوں سے شیئر کریں

تبصرہ کریں