بائیک حادثات کی روک تھام کے لیے انتہائی اہم ہدایات

بائیک حادثات کی روک تھام کے لیے انتہائی اہم ہدایات

تحریر : طاہر محمود

بائیک کے حادثات میں، میں بذاتِ خود اپنے کتنے ہی رشتہ دار، دوست احباب اور شاگرد وغیرہ کھو چکا ہوں. بعض کو دنیا سے رخصت ہوئے برسوں ہو گئے مگر ان کے والدین آج بھی انہیں روتے ہیں. اگر آپ کو اپنی جان کی پروا نہیں ہے تو کم از کم اپنے ماں باپ، بہن بھائیوں اور بیوی بچوں کا ہی خیال کر لیجیے. آپ تو چلے جائیں گے مگر وہ ساری زندگی آپ کو یاد کر کر کے روتے تڑپتے رہیں گے. نہ جی سکیں گے اور نہ مر سکیں گے. ایک تحقیق کے مطابق بائیک چلانا گاڑی چلانے سے ستائیس گنا زیادہ خطرناک ہے.

اس حوالے سے بائیک (موٹر سائیکل) چلانے والوں کے لیے کچھ انتہائی اہم ہدایات تحریر کر رہا ہوں. آپ سے گزارش ہے کہ انہیں ہر بائیک چلانے والے اپنے یا پرائے شخص سے لازمی شیئر کیجیے. (ان میں سے زیادہ تر ہدایات گاڑی چلانے والے حضرات کے لیے بھی ہیں.)

1. بائیک باقاعدہ سیکھ کر چلائیں.
2. جب تک لائسنس نہیں بن جاتا تب تک بائیک کو ہاتھ بھی مت لگائیں. کم عمری میں تو بائیک ہرگز نہ چلائیں.
3. بائیک چلانے کا سیفٹی کورس کرنا بہت فائدہ مند ہے.
4. بہت اہم بات یہ کہ ٹریفک قوانین کی پابندی کیجیے.
5. یاد رکھیں کہ آپ نے صرف غلطی کرنے سے ہی نہیں بلکہ دوسروں کی، کی ہوئی غلطیوں سے بھی بچنا ہے. سڑک استعمال کرنے والے کسی بھی دوسرے شخص پر بھروسہ مت کیجیے.
6. بائیک چلاتے ہوئے موبائل فون اور ہینڈز فری وغیرہ کا استعمال ہرگز نہ کیجیے. توجہ بٹانے والے دیگر کاموں اور دائیں بائیں دیکھنے سے بھی لازمی پرہیز کیجیے. ہمیشہ سامنے دیکھ کر بائیک چلائیں.
7. ایک انتہائی اہم ہدایت یہ ہے کہ "دوسروں کو نظر آئیں". ایسی جگہ سے بچیں جہاں پر آپ کو اگلا پچھلا ڈرائیور دیکھ نہ سکے. رات کے وقت ہیڈ لائیٹ اور بیک لائٹس کا لازمی استعمال کیجیے. اندھیرے میں لائٹس بغیر روڈ پر نکلنا خودکشی کے مترادف ہے.
8. ہیلمٹ کا لازمی استعمال کیجیے. میرے ایک دوست کا شدید ایکسیڈنٹ ہوا مگر محض ہیلمٹ کی وجہ سے اللہ نے جان بچا لی.
9. اوور سپیڈ سے گریز کیجیے.
10. ون ویلنگ اور ایسے دیگر کرتب دکھانے کو حرام اور موت سمجھیے.
11. کسی بھی گاڑی کے زیادہ قریب ہو کر بائیک مت چلائیے.
12. اوور ٹیک میں بےحد احتیاط کیجیے.
13. اچانک بریک کبھی مت لگائیے.
14. جمپ اور کھڈے وغیرہ کا دور سے ہی خیال کیجیے.
15. ٹائروں میں ہوا کا دباؤ مناسب رکھیے.
16. چوکس ہو کر اور پوری توجہ سے بائیک چلائیے.
17. موڑ وغیرہ کاٹتے ہوئے شیشوں کا لازمی استعمال کیجیے.
18. بائیک ہمیشہ نارمل ہو کر چلائیں. زیادہ غصے، نیند، پریشانی شدید بیماری یا نشے کی حالت میں بائیک بالکل بھی نہ چلائیں.
19. بائیک نکالنے سے پہلے تسلی کر لیجیے کہ بریکس، لائٹس، ہارن، اشارہ لائٹس، چین، کلچ اور شافٹ ٹھیک ہیں اور ٹائروں میں مناسب ہوا ہے. ٹائروں کی روڈ گرپ بھی چیک کر لیجیے.
20. اگر ممکن ہو تو ایسا لباس، گلووز اور شوز پہنیں کہ جو اچانک حادثے کی صورت میں آپ کو چوٹوں سے بچا سکے.
21. تیز بارش اور آندھی طوفان والے موسم میں بائیک مت چلائیں.
22. بائیک کی باقاعدہ مرمت کرواتے رہیں. سال میں ایک بار اوور ہالنگ بھی کروا لیں.
23. کسی شخص یا جانور وغیرہ کے اچانک سامنے آ جانے کے امکان کو ہمیشہ ذہن میں رکھیں.
24. روڈ کے درمیان میں بائیک نہ چلائیے.
25. اپنے پیچھے بیٹھنے والے شخص کو بھی مناسب گائیڈ کرکے اپنے پیچھے بائیک پر بٹھائیں.
26. ہمیشہ دفاعی حالت میں بائیک چلائیں.
27. جب بائیک سٹارٹ کرنے لگیں تو بائیک کا سٹینڈ لازمی اوپر کر لیں.
28. دوسرے ڈرائیور کی غلطی پر بھی کبھی جذبات میں مت آئیں.
29. بائیک کو کبھی بھی زیادہ لمبے سفر کے لیے استعمال نہ کیجیے.
30. اگلی گاڑی کے اچانک مڑنے اور پچھلی گاڑی کے آپ کو اوور ٹیک کرنے کے امکانات کو ہمیشہ ذہن میں رکھیے.
31. موڑ کاٹتے ہوئے رفتار کم کر لیجیے اور بہت احتیاط سے موڑ کاٹیے.
32. ٹریفک سگنلز اور اشاروں کو پہچان کر ان کی پابندی کیجیے.
33. بائیک کی روڈ
34. بعض دفعہ آئل وغیرہ گرنے سے سڑک پر پھسلن ہو جاتی ہے. اس کا بھی خیال رکھیں.
35. اپنے ساتھ ایک سے زیادہ بندے مت بٹھائیں. بائیک کو اوور لوڈ کرکے بھی نہ چلائیں.
36. مندرجہ بالا تمام ہدایات پر ہر صورت عمل کیجیے.
37. ان ساری احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کے ساتھ ساتھ اللہ سے خصوصی مدد اور سلامتی کی دعا بھی مانگتے رہیں اور اللہ کے راستے میں صدقہ بھی کرتے رہیں کہ یہ دونوں اعمال آئی ہوئی مصیبتوں کو بھی ٹال دیتے ہیں.
38. اس تحریر کو زیادہ سے زیادہ شیئر کیجیے.

(نوٹ: اتنی محنت سے یہ تحریر لکھنے والے اپنے بھائی کو بھی دعاؤں میں یاد رکھیں.)

دوستوں سے شیئر کریں

تبصرہ کریں