تازہ ترین
لوڈ ہو رہا ہے۔۔۔۔
Sunday, 4 February 2018

ڈیجیٹل کرنسی بٹ کوائن سے پیسے کمانا۔

February 04, 2018

Bitcoin Urdu
ڈیجیٹل یا کرپٹو کرنسی بٹ کوائن سے پیسے کمانا۔

بٹ کوائن ایتھیریم ریپل وغیرہ

بٹ کوائن کیا ہے۔


بٹ کوائن ایک ڈیجیٹل کرنسی ہے یعنی یہ کرنسی کوئی بینک ، ادارہ ، کمپنی یا گورنمنٹ کنٹرول نہیں کرتا۔ اس کا کوئی نوٹ یا سکہ نہیں ہوتا اس کا والٹ انٹرنیٹ پہ بنا کر یہ کرنسی محفوظ کی جا سکتی ہے۔ اسے ستوشی نامی بندے نے ایجاد کیا اور اس کی سسٹم ایسی بنائی کہ اس میں کوئی ترمیم یا اس کے سسٹم کو بند نہیں کیا جا سکتا۔ اس سسٹم کے تحت بٹ کوائن کے اصلی یا نقلی ہونے کا تعین بھی کیا جاتا ہے۔ ایک مخصوص طریقے سے بٹ کوائن بنائے جاتے ہیں جسے مائننگ کہا جاتا ہے ۔ شروع شروع میں بٹ کوائن کی مائننگ یعنی بٹ کوائن بنانا بہت آسان تھا لیکن اب اگر کوئی بٹ کوائن بنانا چاہے تو اس کے لیے ایسے ہائی کوالٹی کمپیوٹرز درکار ہوں گی کہ ان کی قیمت ایک بٹ کوائن کی قیمت سے بھی زیادہ ہوگی۔بٹ کوائن بنانے کی ایک حد مقرر کی گئی ہے اور اس مخصوص تعداد سے زیادہ بٹ کوائن نہیں بنائے جا سکتے۔شروع شروع میں ایک بٹ کوائن کی قیمت ایک ڈالر تھی جو کہ بڑھتے بڑھتے اٹھارہ بیس لاکھ تک بھی پہنچ گئی ان دنوں بٹ کوائن کی قیمت دس لاکھ کے قریب قریب ہے۔ بٹ کوائن کو مقبولیت اس لیے حاصل ہوئی کہ اسے بھیجنے اور وصول کرنے والے کی شناخت ظاہر نہیں ہوتی اس لیے مختلف جرائم پیشہ افراد اور گورنمنٹ ایجنسیاں اس کرنسی کے ذریعے لین دین کرتی ہیں۔  بٹ کوائن کی خرید و فروخت کے لیے آپ کے پاس ایک بٹ کوائن والٹ ہونا چاہیے جو کہ بآسانی بنایا جا سکتا ہے اور اس والٹ کے ذریعے آپ دنیا بھر میں کسی بھی والٹ پر بٹ کوائن بھیج سکتے ہیں۔

بٹ کوائن میں پیسے انویسٹ کرنا


چونکہ اس کرنسی کی قیمت گھٹتی اور بڑھتی رہتی ہے۔ اس سے کمانے کا ایک ہی طریقہ ہے کہ آپ اس کی قیمت کم ہونے پر خریدیں اور قیمت بڑھنے پر فروخت کر دیں۔ مثال کے طور پر اگر آج ایک بٹ کوائن کی قیمت دس لاکھ ہے تو تین مہینے کی اندر اس کی قیمت اٹھارہ سے بیس لاکھ تک بڑھ جاتی ہے۔ چونکہ اس کی قیمت طلب اور رسد کی وجہ سے بڑھتی اور گھٹتی ہے اس لیے کوئی حتمی رائے قائم نہیں کی جا سکتی۔ اس لیے بٹ کوائن خریدنے کے بعد اس کی قیمت میں اتار چڑھاؤ سے پریشان نہیں ہونا چاہیے۔
کبھی کبھی بٹ کوائن کی قیمت اچانک ایک ہفتے میں پانچ لاکھ تک بڑھ جاتی ہے۔ اور پھر اچانک نیچے آتی ہے اور یہ سلسلہ جاری رہتا ہے۔

بٹ کوائن کی قیمت کیوں گھٹتی اور بڑھتی ہے۔


انٹرنیٹ کی ایک ایسی دنیا جسے ڈارک ویب کہا جاتا ہے جس میں کسی عام آدمی کی رسائی نہیں ہوتی۔ وہاں مختلف غیر قانونی دھندے مثلا ہتھیار خریدنے ، ڈرگس ، چائلڈ پورنوگرافی اور قتل وغیرہ کے لیے جرائم پیشہ لوگ بٹ کوائن کے ذریعے لین دین کرتے ہیں۔ جیسے جیسے ڈارک ویب پر اس کی طلب بڑھتی ہے تو بٹ کوائن کی قیمت میں بھی اضافہ ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ اور بھی بہت سے کام جو صرف بٹ کوائن کے ذریعے ہوتے ہیں اس لیے بٹ کوائن کی طلب اور قیمت میں اضافہ ہوتا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ بٹ کوائن کی قیمت پچاس سے ساٹھ لاکھ تک بھی جا سکتی ہے۔ چونکہ اب اس طرح کی بہت سی کرنسیاں وجود میں آگئی ہیں جسے ایتھیریم ریئپل وغیرہ۔ اس لیے بٹ کوائن کی قیمت اور طلب بڑھ جانے کی وجہ سے لوگ متبادل کے طور پر دیگر کرنسیز استعمال کرنے کی طرف توجہ دے رہے ہیں اس لیے بٹ کوائن کی مستقبل کے متعلق کوئی پیشگوئی نہیں کی جا سکتی ہے کہ یہ غبارہ اور کتنا پھولے گا اور کب پھٹ جائے گا۔

بٹ کوائن کی خرید و فروخت


بٹ کوائن خریدنے یا بیچنے کے لیے اس وقت بہت ساری ویب سائٹ موجود ہیں۔ اس وقت پاکستان میں یہ ویب سائٹ قابل اعتماد ہے۔ یہاں اپنا والٹ بنا کر اس میں بٹ کوائن محفوظ کر سکتے ہیں۔ بٹ کوائن خریدنے کے لیے آپ کو اپنے بینک اکاؤنٹ میں انٹرنیٹ بینکنگ کی سہولت فعال کرنی ہوگی۔اس کے بعد آپ اس ویب سائٹ سے بٹ کوائن خرید یا بیچ سکتے ہیں۔

کیا انٹرنیٹ پر بٹ کوائن کمائے جا سکتے ہیں۔



اس وقت بہت سی کمپنیاں بٹ کوائن کمانے کا لالچ دے کر آپ کے کمپیوٹر کے پروسیسر کو بٹ کوائن کی مائننگ کے لیے استعمال کرتے ہیں بدلے میں بٹ کوائن کے چند پوائنٹس دیتے ہیں جن کی کوئی اہمیت نہیں ہوتی۔ لہذا اس طرح کی ویب سائٹ یا سافٹ ویئر استعمال کرنے سے گریز کریں۔

بٹ کوائن حلال ہے یا حرام


اس کا فتوی کوئی مفتی دے سکتا ہے لیکن ہماری رائے یہ ہے کہ ہر چیز کے مثبت اور منفی پہلو ہوتے ہیں۔اگر آپ مثبت طریقے سے استعمال کرتے ہیں تو درست ہے اگر منفی سرگرمیوں میں آپ اگر اصلی کرنسی یعنی حقیقی نوٹ بھی استعمال کریں تو وہ بھی حرام ہی ہوں گے۔
باقی ہمارے ہاں ہر نئی چیز کی مخالفت کی جاتی ہے اور بعد میں وہی لوگ بھی استعمال کرنا شروع کرتے ہیں جو اس کے خلاف ہوتے تیں جیسا کہ ٹی وی ، کمپیوٹر , کیمرے وغیرہ کی مثالیں ہمارے معاشرے میں موجود ہیں۔


تجزیہ


ڈیجیٹل کرنسی یعنی کرپٹو کرنسی نے دنیا میں ایک انقلاب برپا کیا ہے۔  مختلف ممالک اور بڑے بڑے بینک ڈیجیٹل کرنسی کو استعمال کرنے کے طریقے اور اصول لاگو کرنے کے متعلق سوچ رہے ہیں۔ حال ہی میں ایک بڑے انٹرنیشنل بینک نے ڈیجیٹل کرنسی ایتیھریم کو بطور کرنسی استعمال کرنے کی سہولت متعارف کراوئی۔ اس کے علاوہ فیس بک کے بانی مارک زکر برگ کا ایک بیان سامنے آیا تھا کہ وہ ڈیجیٹل کرنسی کو استعمال کرنے کے متعلق کوششیں کر رہے ہیں۔ایسا لگ رہا ہے کہ بہت جلد تمام ممالک ڈیجیٹل کرنسی کے ذریعے لین دین کا سلسلہ شروع کریں گے۔
جدید تر اشاعتیں
یہ سب سے جدید اشاعت ہے
Older Post

0 تبصرے:

Post a Comment

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


Contact Form

Name

Email *

Message *

Powered by Blogger.
 
فوٹر کھولیں