معصوم بیوی | Tok Tv

گزشتہ رات میں نے اپنے بستر پر نیند آنے سے پہلے اپنے بغل میں سوئی ہوئی بیوی کے چہرے کو غور سے دیکھا، اس کی پیاری سی و نازک شکل پر کافی دیر غور کرتا رہا، پھر میں اپنے آپ سے کہا یہ عورت بھی کیا مسکین ہوتی ہے، برسوں تک اپنے باپ کی شفقت کے سائے تلے اپنے گھر والوں کے ساتھ پلتی بڑھتی ہے، اور اب کہاں ایک نا واقف شخص کے ساتھ آ کر سوئی پڑی ہے، اور اس نا واقف شخص کیلئے اس نے اپنے گھر بار ماں باپ سب چھوڑا، حتاکہ والدین کا لاڈ و پیار اور ناز نخرا چھوڑا

اور اپنے گھر میں راحت اور آرام کی زندگی کو چھوڑا، اور ایسے شخص کے پاس آئی پڑی ہے جو بس اسے اچھے کی تلقین اور برائی سے روکتا ہے۔ اس شخص کی دل و جان سے خدمت کرتی ہے۔ اس کا دل بہلاتی ہے، اس کو راحت اور سکون دیتی ہے، تاکہ بس اس کا رب اس سے راضی ہو جائے، اور بس اس لئیے کہ یہ اس کیلئے اس کے دین کا حکم ہے۔ کچھ لوگ تو ظلم کی انتہا کرتے ہیں یہاں تک کہ وہ گھر سے دھکے دیکر کر نکلتی ہیں۔ انہیں واپس اپنے ماں باپ کے اس گھر لا ڈالتے ہیں۔ جو وہ اس کی خاطر چھوڑ کر آئی تھی کیسے ہوتے ہیں کچھ لوگ۔ جو بیویوں کو گھر میں ڈال کر دوستوں کے ساتھ نکل کھڑے ہوتے ہیں، ہوٹلوں میں جا کر وہ کچھ کھاتے پیتے ہیں جس کا ان کے گھر میں تصور بھی نہیں کیا جا سکتا۔ کیسے ہوتے ہیں کچھ لوگ جن کے باہر اٹھنے بیٹھنے کا دورانیہ ان کے اپنے بیوی بچوں کے پاس اٹھنے بیٹھنے کے دورانیئے سے زیادہ ہوتا ہے۔ کیسے ہوتے ہیں کچھ لوگ، جو اپنے گھر کو اپنی بیوی کیلئے جیل بنا کر رکھ دیتے ہیں، نا انہیں کبھی باہر اندر لیجاتے ہیں، اور نا ہی کبھی ان کے پاس بیٹھ کر ان سے دل کا حال سنتے سناتے ہیں۔

کیسے ہوتے ہیں کچھ لوگ جو اپنی بیوی کو ایسی حالت میں سلا دیتے ہیں کہ اس کے دل میں کسی چیز کی خلش اور چھبن تھی، اس کی آنکھوں میں آنسو تھے اور اس کا گلا کسی قہر سے دبا جا رہا تھا۔ کیسے ہوتے ہیں کچھ لوگ، جو اپنی راحت اور اپنی بہتر زندگی کیلئے گھر چھوڑ کر باہر نکل کھڑے ہوتے ہیں، پیچھے مڑ کر اپنی بیوی اور بچوں کی خبر بھی نہیں لیتے کہ ان پر ان کے باہر رہنے کے عرصہ میں کیا گزرتی ہوگی.. کیسے ہوتے ہیں کچھ لوگ، جو ایسی ذمہ داری سے بھاگ جاتے ہیں جس کے بارے میں ان سے روز محشر پوچھ گچھ کی جائے گی.. اپنی ماں اور اپنی بیوی دونوں کو بے پناہ عزت دو، اسلئے کہ ایک تمہیں دنیا میں لائی۔ ہمیں چاہیے کہ ہم اپنی بیوی کو عزت دے۔کیوں یہ کسی اور کیلئے نہیں بلکے ہمارے لیۓ ہی اپنی ماں باپ گھر چھوڑ کر اتی ہے۔اور یہاں اپنے اپ سے زیادہ اپنے خاوند کا خیال رکھتی ہے۔کہ وہ ناراض نہ ہو۔دوستوں اگر پسند ایہ ہو تو ضرور اپنے دوستوں کے ساتھ شئیر کرلو۔

Sharing is caring!

یہاں کلک کر کے شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *