”طلال چوہدری کے ساتھ ہونے والے واقعے کا اخلاقی پہلو کیا ہے؟

تین ن لیگی عورتیں۔ ن لیگ کے لیڈرز اپنی پارٹی کی خواتین پر ہی ہاتھ صاف کرنے میں ماہر ہیں اور طلال چوہدری جیسا یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں ہے۔

 

 

 

 

 

درجنوں واقعات میں بڑے بڑے ن لیگی ملوث رہے مگر یہاں صرف چند ایک واقعات بتاتا ہوں جو پہلے سے ہی پبلک ہیں

 

 

 

 

 

 

طلال چوھدری نہ تو پہلا ن لیگی ہے اور نہ ہی آخری جو اپنی ہی پارٹی خواتین کو حراساں کرتا پکڑا گیا،

 

 

 

 

 

 

معاشقوں اور خفیہ شادیوں کے رسیا شہباز شریف کے فرزند حمزہ شہباز نے اپنے ہی باپ کے گوالمنڈی کے دوست سابق ایم این اے احد ملک کی بیٹی عائشہ احد ملک سے شادی کی مگر جب دل بھر گیا تو اس شادی سے ہی مکر گیا

 

 

 

 

 

 

 

دوسرا واقعہ انتہائی دلخراش ہے یہ واقعہ ن لیگی دور حکومت میں پیش آیا جب ن لیگ کی اوکاڑہ سے خاتون ورکر سمیعہ کی لاش چنبہ ہاؤس لاجز میں ن لیگی ایم این اے محمد اقبال کے نام سے بکڈ ایک کمرے سے ملی ،

 

 

 

 

 

 

 

 

 

اس معاملے میں طلال چوہدری تھوڑا بدقسمت نکلا کیونکہ طلال چوہدری نے جس خاتون کو حراساں لرنے کوشش کی وہ کوئی عام لیگی ورکر نہیں ۔

 

 

 

 

 

 

بلکہ خود ایک ایم این اے ہے جس کا مرحوم شوہر رجب بلوچ بھی فیصل آباد سے ایم این اے منتخب ہوا تھا اور اس بلوچ خاندان سے سے دو ایم پی ایز بھی ہیں

 

 

 

 

 

طلال چوہدری غالبا عائشہ رجب کو عائشہ احد اور سمیعہ خاتون سمجھ بیٹھا اور غلطی کرگیا

 

 

 

 

 

پھر اسکے بعد جو ہوا وہ سب کے سامنے ہے

مگر کہانی ابھی ختم نہیں ہوئی کیونکہ عائشہ رجب مریم نواز کے کافی قریب ہے ۔

 

 

 

 

 

 

اور عائشہ رجب تقاضا کررہی ہے کہ طلال چوہدری کو پارٹی سے نکال باہر کیا جائے ورنہ وہ اسمبلی نشست سے مستعفی ہو جائے گی۔

 

 

 

 

 

 

یعنی طلال چوہدری کی دوہری ٹھکائی ابھی ہونا ہے پہلے تو طلال چوہدری کی جم کر پٹائی لگائی گئی اب پارٹی سے دیس نکالا بھی ہوسکتا ہے،

 

 

 

 

اس وقت طلال چوہدری کے خلاف پوری ن لیگ ہے کیونکہ طلال چوہدری نے جس خاتون کو ہراساں کیا

 

 

 

 

وہ طاقتور خاندان سے ہے اگر عائشہ رجب کی جگہ کوئی دوسری کمزور ن لیگی ورکر خاتون ہوتی تو آج پوری ن لیگ طلال چوہدری کے دفاع پر لگی ہوتی

یہاں کلک کر کے شیئر کریں

Articles You May Like

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *