اچھا تو یہ بات تھی۔۔!! کچھ روز قبل لاپتہ ہونے والی خاتون وکیل نے بازیابی کے فوراً بعد کن افراد کو ملزم نامزد کر دیا؟ کیس میں ایک نیا موڑ آگیا

اوکاڑہ (ویب ڈیسک) پنجاب میں لاپتہ ہوکر بازیاب ہونے والی خاتون وکیل لنے سابق شوہر سمیت چار افراد کو ملزم نامزد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق لاپتہ اور بازیاب ہونے والی خاتون وکیل نسرین ارشاد کو بیان قلمبند کرانے کےلیے عدالت میہں پیش کردیا گیا ہے جہاں متاثرہ خاتون نے وکیلک نے 4 افراد کو نامزد کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایڈوکیٹ نسرین ارشاد کی جانب سے نامزد کردہ ملزمان میں سابق شوہر اکمل، نذد فرید، حق نواز اور اویس شامل ہیں۔

ذرائع کے مطابق متاثرہ خاتون وکیل ایڈوکیٹ نسرین ارشاد کا سابقہ شوہر اکمل کے ساتھ جائیداد کا تنازع چل رہا ہے۔

خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے خاتون وکیل کے لاپتہ اور بد فعلی کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس،

متعلقہ اداروں کو جلد ملزمان کو گرفتار کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا تھا کہ ملوث ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

یاد رہے کہ خاتون وکیل کو لاپتہ کرنےکے بعد ظلم و زیادتی کا نشانہ بنا کر تھانہ صدر میلسی کی حدود میں سڑک کنارے پھینک کر فرار ہوگئے تھے،

نسرین ارشاد کو 14 اگست کو لاپتہ کیا گیا تھا۔ پولیس ریکارڈ کے مطابق خاتون وکیل 7 مقدمات میں مدعیہ، 2 میں ملزم اور 6 میں بطور گواہ ہے،

پولیس ریکارڈ کے مطابق خاتون وکیل کی رنجش بھی چل رہی ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے خاتون وکیل نسرین ارشاد کے لاپتہ کا نوٹس لے لیا،

ایڈووکیٹ نسرین ارشاد کو نامعلوم افراد نے لاپتہ کیا تھا اور تھانہ صدر میلسی کی حدود میں پھینک کر فرار ہوگئے تھے۔ وزیراعظم نے پولیس،

متعلقہ اداروں کو جلد ملزمان کو گرفتار کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ ملوث ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے خاتون وکیل کی ویڈیو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر شیئر کی۔

دوسری جانب ڈی پی او اوکاڑہ کا کہنا تھا کہ واقعے میں ملوث ملزمان کو جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔

پولیس ریکارڈ کے مطابق خاتون وکیل 7 مقدمات میں مدعیہ، 2 میں ملزم اور 6 میں بطور گواہ ہے، پولیس ریکارڈ کے مطابق خاتون وکیل کی رنجش بھی چل رہی ہے۔

یہاں کلک کر کے شیئر کریں

Articles You May Like

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *